سٹالن سے اظہارِ محبت کے نئے انداز


تحریر: رضوان عطا

بعضوں کی جانب سے سٹالن کی حمایت کی جدوجہد، جوآج کل زیادہ تر سوشل میڈیا پر اُمنڈ آئی ہے، عجب رنگ ڈھنگ لیے ہوئے ہے۔ سٹالن کی حمایت میں ایک چھوٹا سا رجحان لینن کے ٹراٹسکی کے خلاف بیانات کے مخصوص حصوں کو سامنے لا لاکر اسے غلط اور قابلِ نفرت ’ثابت‘ کرنے کے درپے ہے۔ اس کے نزدیک لڑکھڑا کر چلنے والی ٹوٹی پھوٹی سٹالینی روایت میں نئی روح پھونکی جاسکتی ہے اگر ٹراٹسکی کو نیچ اور گھٹیا اور سٹالن کو پاک اور عظیم ’ ثابت‘ کردیا جائے۔  پڑھنا جاری رکھیں

Advertisements

ہمیں ایک انقلابی جماعت کی ضرورت کیوں ہے؟

ہمیں ایک انقلابی جماعت کی ضرورت کیوں ہے؟

تحریر: ٹونی کلف


مزدور طبقے میں ناہموار شعور

ہمیں انقلابی جماعت (پارٹی)کی ضرورت کیوں ہے؟ اس کی بنیادی وجہ وہ دو بیانات ہیں جو(کارل) مارکس نے دیے۔ اس نے کہا ”مزدور طبقے کی آزادی اس کے عمل سے ہے۔“ اسی کے ساتھ اس نے کہا کہ ”ہر سماج میں غالب نظریات حکمران طبقے کے نظریات ہوتے ہیں۔“

ان دو بیانات کے درمیان تضاد ہے۔ لیکن یہ تضاد مارکس کے سَر میں نہیں۔ اس کا وجود حقیقت میں ہے۔ اگر ان میں سے کوئی ایک بیان درست ہوتا تو انقلابی جماعت بنانے کی کوئی ضرورت نہ ہوتی۔ اگر مزدور طبقے کی آزادی اس کے عمل سے ہے، اور بس، تو سچی بات یہ ہے کہ ہمیں سوشل ازم کے لیے جدوجہد کرنے کی ضرورت نہیں۔۔۔ بس ہاتھ پر ہاتھ رکھیں اور مسکرائیں۔ مزدور خود ہی اپنے آپ کو آزاد کرا لیں گے!

دوسری طرف اگر ”ہر سماج میں غالب نظریات حکمران طبقے کے نظریات ہوتے ہیں“اور بس، تو مزدور ہمیشہ حکمرانوں کے نظریات کو مانتے۔ پھر ہم ہاتھ پر ہاتھ رکھ کر بیٹھتے اور آنسو بہاتے کیونکہ کچھ کیا ہی نہیں جا سکتا۔ پڑھنا جاری رکھیں