لیون پنیٹا کا دورہ اور بھارت

 

لیون پنیٹا کا دورہ اور بھارت

کیا دہلی واشنگٹن کے تابع ہوگا؟

رضوان عطا

امریکی سیکرٹری دفاع لیون پنیٹا نے حال ہی میں ایشیائی ممالک کا دورہ کیا تاہم اس دورے میں بھارت کو مرکزی حیثیت دی گئی۔ آخر کیوں؟

جب2011ء کے اوائل میں لیون پنیٹا کو سیکرٹری دفاع کے عہدے کے لیے نامزد کیا گیا تو ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے سینیٹ میں موجود ہرشخص نے تصدیق کی مہر ثبت کی۔ حلف اٹھانے کے بعد لیون پنیٹا کی اولین کاوشوں میں امریکی دفاعی بجٹ میں بڑی کٹوتی کو روکنا تھا کیونکہ ان کے مطابق اس سے ابھرتے چین، شمالی کوریا اور ایران سے نپٹنےمیں پنٹا گان کی کوششیں متاثر ہوں گی۔ پڑھنا جاری رکھیں

افغانستان میں پُر تشدد مظاہرے

افغانستان میں پُر تشدد مظاہرے

امریکی مشکل میں اضافہ

رضوان عطا

امریکی فوجیوں کے ہاتھوں قرآن جلائے جانے پر ہونے والے شدید احتجاج کے پانچویں دن ایک شخص نے دو (غیر ملکی) افسران پر گولیاں چلادیں۔ اس واقعے کا مرکزی مشتبہ ملزم فائرنگ کے بعد فرار ہوگیا۔ اطلاعات کے مطابق یہ شخص وزارتِ داخلہ کے ساتھ خاصے عرصے سے منسلک تھا اور سکیورٹی انتظامات کا نگران تھا۔ اس واقعے کے بعد نیٹو، برطانیہ اور فرانس کی تقلید کرتے ہوئے جرمنی نے بھی افغانستان کی مختلف وزارتوں سے اپنے تمام اہلکاروں کو واپس بلالیا ہے۔ غیر ملکی فوجیوں کے ہاتھوں قرآن کو جلانے کے واقعے پر نیٹو فورسز کے امریکی کمانڈر جنرل جان آرایلن اور امریکی صدر باراک اوباما کی معافی بھی کوئی اثر نہ دکھا سکی اور نہ ہی ٹیلی ویژن پر افغان صدر حامد کرزئی کی عوام کو پُر امن رہنے کی اپیل۔ اتوار کو احتجاج رکوانے کی خواہش کے ساتھ جب حامد کرزئی نے افغان عوام سے اپیل کی تو انہوں نے یہ اعتراف بھی کیا کہ اب تک تقریباً29 افراد ہلاک اور200 زخمی ہوچکے ہیں۔ اس اپیل کے بعد صوبہ قندوز کے شہر امام صاحب میں واقع ایک امریکی فوجی اڈے پر مظاہرین نے ہینڈ گرینیڈ سے حملہ کیا جس سے امریکی سپیشل فورسز کے سات اہلکار زخمی ہوگئے۔ پڑھنا جاری رکھیں

ہتھیاروں کی دوڑ

ہتھیاروں کی دوڑ

رضوان عطا

دنیا میں حالیہ معاشی بحران کی وجہ سے بے روزگاری اور غربت میں اضافہ ہوا ہے لیکن حیرت کی بات ہے کہ ہتھیاروں کی دوڑ بھی بڑھ گئی ہے۔ ہتھیاروں کے معاملات پر تحقیقی کام کرنے والے معروف ادارے سٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (سپری) کی گزشتہ ماہ سامنے آمنے آنے والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 2005 سے 2009 کے دوران روایتی ہتھیاروں کی فروخت بائیس فیصد بڑھی۔ اس رپورٹ کی روشنی میں عالمی سطح پر ایک ایسے رجحان کا پتہ چلتا ہے جس کا نتیجہ عوامی فلاح کی بجائے جنگوں اور نتیجتاً تباہی کی صورت نکل سکتا ہے۔ اگر مزید جنگیں نہ بھی ہوں تب بھی تباہی کا سامان پیدا اور اکٹھا کرنے کا کیا جواز ہے؟ یہ کاروبار انسانیت کو سہولت فراہم کرنے کی بجائے اس پر روز بروز بڑھتا ہوا بوجھ بن گیا ہے۔ ترقی یافتہ اور وسائل رکھنے والے ممالک اپنے سرمائے کی بڑی مقدار فروخت کی غرض سے بنائے جانے والے ہتھیاروں پر خرچ کر رہے ہیں اور ترقی پذیر ممالک ان کی سب سے بڑی منڈی ہیں۔ دوسری طرف ترقی پذیر ممالک کے مقتدر حلقے عوامی ضروریات کو پسِ پشت ڈال کر اس دوڑ میں شامل ہیں۔ پڑھنا جاری رکھیں

ثانیہ اور شعیب کی شادی میں آپ کیوں دلچسپی لے رہے ہیں؟

ثانیہ اور شعیب کی شادی میں آپ کیوں دلچسپی لے رہے ہیں؟


رضوان عطا

یہاں اگر کوئی دو اپنی مرضی سے شادی کرلیں تو مصیبت میں پڑ سکتے ہیں۔ خصوصاً اگر برادری یا قبیلہ دوسرا ہو۔ مارے بھی جا سکتے ہیں۔ بعض معاملات میں "سزاکم ہوجاتی ہے بس زبردستی علیحدہ کر دیا جاتا ہے۔ لڑکی کی شادی کہیں اور کر دی جاتی ہے اور لڑکے کو کسی اور کے بارے سوچنے پر مجبور کر دیا جاتا ہے۔ ذرائع ابلاغ کی نظروں میں آگئے تو نتیجتاً ملنے والی "شہرتلڑکی کے قبیلے یا برادری کو مصیبت میں ڈال دیتی ہے۔ "انکی "شےکی واپسی کے امکانات معدوم ہوتے جاتے ہیں اور انگلیاں اٹھانے والوں کی تعداد میں خاطر خواہ اضافہ ہوتا جاتا ہے۔ مگر اس شہرت سے جوڑے کے بچاؤ کے امکانات کچھ بڑھ جاتے ہیں بشرطیکہ دونوں کو بات کرنا آتی ہو۔ آخر رسمی تعلیم کی بھی تو ایک اہمیت ہے، جس بیچارے کو پڑھنے کا موقع نہیں ملا سمجھیں مارا گیا۔ یہ امکانات تب بھی بڑھ جاتے ہیں جب دونوں میں سے کسی ایک کا طبقہ مختلف ہو۔ مثلاً اگر لڑکا امیر ہے تو راضی نامے میں آسانی ہوتی ہے۔ لڑکی والوں کو ڈر ہوتا ہے کہ تعلقات والے ہوں گے کہیں نقصان زیادہ ہی نہ ہو جائے، پھر کوئی یہ بھی تو سمجھاتا ہو گا کہ لڑکی سکھی رہے گی، کچھ عرصے بعد بات آئی گئی ہو جائے گی۔ پڑھنا جاری رکھیں

پاک بھارت مذاکرات اور کشمیر

پاک بھارت مذاکرات اور کشمیر

رضوان عطا

1991ء سے منائے جانے والے ’یوم یکجہتی کشمیر‘ سے ایک روز قبل وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے تصدیق کی کہ بھارت نے پاکستان کو خارجہ سیکرٹریز کی سطح پر بات چیت شروع کرنے کی تجویز پیش کی ہے۔ اس سے قبل دفتر خارجہ کے ترجمان نے ایک بریفنگ میں روابط کی بحالی کے لیے ’کچھ تجاویز‘ کے موصول ہونے کی تصدیق تو کی لیکن ان کی تفصیل بتانے سے اس بنیاد پر انکار کیا کہ فی الوقت یہ مناسب نہیں۔ اس موقع پر انہوں نے پاکستان کے روایتی مؤقف کو دہراتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی مرضی سے ہونا چاہیے اور یہ کہ کشمیری عوام کی حمایت جاری رکھی جائے گی۔ پاکستان اور بھارت کے مابین مذاکرات کی بحالی کی خبروں کے ساتھ ساتھ کشمیر کا معاملہ بھی اُبھر کر سامنے آ گیا ہے، جس کی وجہ دونوں ممالک میں پیدا ہونے والی صورت حال کے ساتھ ساتھ بھارتی کشمیر میں ہونے والے احتجاج بھی ہیں۔ علاوہ ازیں مفاہت کے لیے عالمی دباؤ نے بھی کردار ادا کیا ہے۔ پڑھنا جاری رکھیں

تامل ٹائیگرز پر بڑا حملہ

تامل ٹائیگرز پر بڑا حملہ

رضوان عطا

علحیدگی پسند تامل ٹائیگر(لبریشن ٹائیگرز آف تامل ایلام) کا دارالحکومت کہلانے والا شہر کلینوچی اس کے بعد سری لنکا کی افواج کے قبضے میں ہے اور اب وہ ملک کے شمالی علاقوں کی طرف پیش قدمی کر رہی ہیں۔ بلاشبہ کلینوچی پر قبضہ تامل ٹائیگر کے لیے بڑا دھچکہ اور حکومت کے لیے اہم کامیابی ہے۔ افواجِ سری لنکا اب ساحلی شہر مولائتیوو اور ارد گرد کے علاقوں پر نظریں جمائے ہوئے ہیں جہاں اطلاعات کے مطابق ہیلی کاپٹروں کی مدد سے بمباری کی جا رہی ہے۔ ابھی تک دونوں طرف ہونے والی ہلاکتوں کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے اور نہ ہی تامل ٹائیگرز نے کلینوچی پر سرکاری افواج کے قبضے کے حوالے سے کوئی بیان دیا ہے۔ لیکن محسوس یہی ہوتا ہے کہ وہ اب یہاں نہیں رہے۔ صدر مہندا راجاپکسے کی طرف سے اس کامیابی کا باقاعدہ اعلان ہو چکا ہے۔ پڑھنا جاری رکھیں